چار ممالک میں دو کروڑ افراد کو فاقہ کشی کا خطرہ، اقوام متحدہ متحرک

تنازعات انسانی زندگی پر تباہ کن اثرات مرتب ہو رہے ہیں ،دنیا مزید رقوم عطیہ کرے،سلامتی کونسل
نیویارک:عالمی سلامتی کونسل نے یمن ، صومالیہ ، جنوبی سوڈان اور شمال مشرقی نائجیریا میں متحارب فریقوں سے اپیل کی ہے کہ وہ متاثرہ علاقوں میں انسانی امداد داخل ہونے کی اجازت دیں۔ کونسل نے دنیا بھر کے ممالک پر زور دیا ہے کہ وہ 2 کروڑ افراد کو درپیش فاقہ کشی کے خطرے سے بچاؤ کے لیے مزید رقوم عطیہ کریں۔عرب ٹی وی کے مطابق سویڈن کی جانب سے تشکیل دیے گئے بیان میں 15 ممالک پر مشتمل سلامتی کونسل نے گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے باور کرایا کہ حالیہ تنازعات اور پرتشدد واقعات کے انسانی زندگی پر تباہ کن اثرات مرتب ہو رہے ہیں اور چاروں ممالک میں یہ فاقہ کشی کا مرکزی سبب ہے۔

مزید پڑھیں :ہمیں جہنم سے نکالنے میں مددکریں،جنسی کنیز کا بھارتی وزیرِاعظم مودی کو خط

رواں برس فروری میں اقوام متحدہ نے عالمی برادری سے 4.9 ارب ڈالر فراہم کرنے کی اپیل کی تھی تا کہ 70 برس قبل اقوام متحدہ کی تشکیل کے بعد سے اب تک کے سب سے بڑے انسانی بحران کا انسداد کیا جا سکے۔ تاہم تنظیم کے ایک ترجمان اسٹیفن ڈوجارک کے مطابق اقوام متحدہ کو مطلوبہ رقم میں سے صرف 51 فی صد موصول ہوئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں