کشمیری خواتین کی زبردستی چٹیا کاٹنے کےخلاف قرارداد جمع

لاہور: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے کشمیری خواتین کی زبردستی چٹیا کاٹنے کے خلاف پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع کرا دی ہے ۔
ذرائع کے مطابق قرارداد مسلم لیگ ن کی حنا پرویز بٹ کی جانب سے جمع کرائی گئی ہے اور اقوام متحدہ سے بھارتی فوج کے اس گھناونے فیل کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا گیا ہے ۔ قرارداد میں میں کہا گیا ہے کہ کشمیری خواتین کی زبردستی چٹیا کاٹنا عورت کی توہین کے مترادف ہے ۔قرارداد میں مزید کہا گیا ہے کہ بھارتی حکومت کشمیریوں پر ظلم وستم کے پہاڑ گرا رہی ہے ، پہلے کشمیری بچوں کو اسکولوں میں بند کیا گیا، اب خواتین کی زبردستی چٹیا کاٹی جا رہی ہیں۔

مزید پڑھیں :جسٹس (ر) جاوید اقبال نے چیئرمین نیب کا چارج سنبھال لیا

بھارتی فوج کے اس قابل مذمت فعل پر انسانی حقوق کی تنظیموں کی خاموشی لمحہ فکریہ ہے ۔ اقوام متحدہ بھی ہوش کے ناخن لے اور خواب خرگوش سے جاگے ۔واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیرمیں بچیوں اورخواتین کے چٹیا کاٹنے کے واقعات رونما ہورہے ہیں جب کہ گزشتہ روز بھی گاندرہل، بارہ مولہ اور بڈگام میں کم از کم 10 واقعات ریکارڈ کئے گئے ہیں۔

Summary
Review Date
Reviewed Item
کشمیری خواتین کی زبردستی چٹیا کاٹنے کےخلاف قرارداد جمع
Author Rating
51star1star1star1star1star

اپنا تبصرہ بھیجیں