پیرس، لیبرقانون میں اصلاحات کے خلاف پرتشدد مظاہرے

پیرس : فرانس کے دارالحکومت پیرس میں لیبرقانون میں اصلاحات کے خلاف ہونے والے مظاہرے کے دوران اس وقت جھڑپیں ہوئیں جب پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے آنسوگیس کا استعمال کیا۔فرانسیسی میڈیا کے مطابق صدر ایمانوئل ماکرون نے گذشتہ ماہ 29 ستمبر کو لیبر قانون میں اصلاحات کے بل پر دستخط کرکے اس کو قانونی حیثیت دے دی تھی۔ پیرس اس قانون کے خلاف مطاہرہ کیا گیا جس سے مظاہرے کے فرانس کے کئی بین الاقوامی ہوائی اڈوں پر پروازوں کے نظام میں خلل پڑا۔

مزید پڑھیں :دمشق میں پولیس مرکزپرخودکش حملہ،پانچ افرادہلاک،15زخمی

مظاہرین کا کہنا ہے کہ اس قانون سے فیکٹریوں اور کارخانوں کے مالکان کومحنت کشوں کے مقابلے میں زیادہ مراعات دی گئی ہے اور اس قانون کی بنیاد پر فیکٹریوں اور کارخانوں کے مالکان کو یہ اختیار حاصل ہوجائے گا کہ وہ محنت کشوں کوآسانی کے ساتھ نوکریوں سے نکال سکیں گے ۔ فرانسیسی پولیس نے اعلان کیا ہے کہ اس نے مظاہرے سے قبل تین افراد کو غیر قانونی طور پراسحلہ رکھنے کے جرم میں گرفتار کرلیا گیا۔ پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے آنسوگیس کا استعمال کیااور جواب میں مظاہرین نے بھی پولیس پر پتھراؤ کردیا ۔

Summary
Review Date
Reviewed Item
پیرس، لیبرقانون میں اصلاحات کے خلاف پرتشدد مظاہرے
Author Rating
51star1star1star1star1star

اپنا تبصرہ بھیجیں