پاکستان کےتجارتی خسارے میں اضافےکا سبب برآمدات میں کمی ہے

اسلام آباد: عالمی بینک نے کہا ہے کہ رواں مالی سال 2017-18 کیلیے پاکستان کی معاشی ترقی( جی ڈی پی) میں5.5 فیصد اضافے کی توقع ظاہر کی ہے جبکہ آئندہ مالی سال 2018-19 کے دوران معاشی ترقی کی شرح5.8 فیصد تک بڑھنے کا امکان ہے ۔
عالمی بینک نے جنوبی ایشیا کے حوالے سے جاری کردہ اپنی رپورٹ میں مزید کہا ہے کہ پاکستان کے تجارتی خسارے میں اضافے کا سبب برآمدات میں کمی ہے ۔ رپورٹ کے مطابق اس وقت پاکستان کے جاری کھاتوں کا خسارہ مجموعی قومی پیداوار (جی ڈی پی) کے 4.1 فیصد کے مساوی ہے ۔



مزید پڑھیں :سونے کی فی تولہ قیمت 57ہزار روپے سے نیچے آگئی

عالمی بینک نے اپنی رپورٹ میں خطے کے دیگر ممالک کی اقتصادی کارکردگی کا تجزیہ پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ رواں مالی سال میں بھارت کی معاشی ترقی کی شرح6.7 فیصد جبکہ رواں سال 2018 ء کے لیے سری لنکا کی معاشی ترقی میں5 فیصد کے اضافے کا امکان ہے ۔عالمی بینک کا کہنا ہے کہ پاکستانی معیشت کے ترقی کرنے کی رفتار 5.5 فیصد رہنے کی توقع ظاہر کی ہے جبکہ عالمی معاشی نمو 3.1 فیصد رہے گی۔رپورٹ کے مطابق عالمی معیشت ترقی کی شاہراہ پرہے پاکستانی معیشت بھی ترقی کا سفر جاری رکھے گی جبکہ 2008 ء کے مالیاتی بحران کے بعد یہ اپنی پوری صلاحیت سے آگے بڑھ رہی ہے لیکن نمو کا دورانیہ قلیل ہے ، جو معیار زندگی بہتر بنانے اور غربت ختم کرنے کی کامیا بیوں پر قدغن ہے ، بینک البتہ صورتحال پر ضرورت سے زیادہ پرامید ہیں۔

Summary
Review Date
Reviewed Item
پاکستان کےتجارتی خسارے میں اضافےکا سبب برآمدات میں کمی ہے
Author Rating
51star1star1star1star1star

اپنا تبصرہ بھیجیں