غیرضروری مناظر سے بچانے والی فوکس کیپ

برلن: ایک عرصے سے شور ختم کرنے والے آلات اور ہیڈ فونز دنیا بھر میں استعمال ہورہے ہیں لیکن اب جرمنی کے ایک ڈیزائنر نے کارکنوں اور ڈرائیوروں کے لیے ’بصری شور‘ کم کرنے کے لیے یہ ٹوپی بنائی ہے جسے ’فوکس کیپ‘ کا نام دیا گیا ہے۔

دنیا میں مصروف لوگ ایک وقت میں ایک کام کرنا چاہتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ اس دوران انہیں صرف وہی شے دکھائی دے جس پر وہ کام کررہے ہیں۔ نفسیاتی طور پر بھی ضروری ہے کہ نظر اور توجہ اِدھر اور اُدھر نہ بھٹکائی جائے اسی لیے اس کیپ کو فوکس کیپ کا نام دیا گیا ہے۔

جس طرح گھوڑوں اور سواری کے دیگر جانوروں کے چہرے پر خاص نقاب منڈھا جاتا ہے عین اسی اصول پر یہ کیپ تیار کی گئی ہے۔ اس کے دونوں کنارے مڑ کر 90 درجے پر سیدھے ہوجاتے ہیں اور یوں آپ کو دائیں اور بائیں کی چیزیں دکھائی نہیں دیتیں۔



قالین میں چھپے 44 انتہائی مضر صحت کیمیکل

اسے جرمن ماہر ہینس گریبن نے ڈیزائن کیا ہے جو سمجھتے ہیں کہ قدرتی ماحول میں رہتے ہوئے کسی منظر یا کام پر توجہ رکھنے کے لیے یہ ایک بہترین ذریعہ ہے۔

یاد رہے کہ ماضی میں ایسے کئی ہیلمٹ اور کیپ بنائے جاتے رہے ہیں جو اطراف کے مناظر کو روک کر آپ کی توجہ سامنے کی جانب رکھتے ہیں۔ ان میں 1925ء میں ڈیزائن کردہ ’آئسولیٹر‘ سے لے کر گزشتہ برس تیار کیے جائے والا ہیلمفون ہیلمٹ بھی شامل ہے۔

Summary
Review Date
Reviewed Item
غیرضروری مناظر سے بچانے والی فوکس کیپ
Author Rating
51star1star1star1star1star

اپنا تبصرہ بھیجیں