موسیقی کا شعبہ زوال پذیر ہے، سارہ لورین

شلاہور: اداکارہ وماڈل سارہ لورین نے کہا ہے کہ انڈسٹری میں اچھی فلمیں بننے کے باوجود موسیقی کا شعبہ بہت پیچھے رہ گیا ہے۔

سارہ لورین نے کہا کہ ایک دور تھا جب ہرکوئی پاکستانی فلم اورسینما کو تنقید کا نشانہ بنانا اپنا ’’ فرض ‘‘سمجھتا تھا لیکن اب وقت بدل چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں اچھی اورمعیاری فلمیں پروڈیوس ہونے لگی ہیں۔ فلموں کی کہانیاں، ڈائیلاگ اورلوکیشنز کے ساتھ ساتھ نوجوان فنکاروں کی آمد نے ایک نئی فلم انڈسٹری کی شروعات کردی ہے۔



دپیکا کی کترینہ سے نفرت میں ہر حد پار

سارہ لورین نے کہا کہ بلاشبہ ہمارے ملک میں ٹیلنٹ کی کوئی کمی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں جب وسائل کی بے پناہ کمی تھی، اس وقت بھی ہمارے ملک میں بہترین فلمیں پروڈیوس ہوئیں۔ خاص طورپرفلم کا میوزک اس قدر جاندارہوا کرتا تھا کہ اس کی آج بھی مثال دی جاتی ہے۔
اداکارہ نے کہا کہ اس وقت اگرہماری فلموں میں پیچھے رہ جانے والی چیز کی بات کریں تووہ میوزک کاشعبہ ہے۔ نوجوان فلم تاحال فلمی میوزک کوایسا عمدہ نہیں بنا سکے، جس کی وجہ سے ہمارے ملک میں دوبارہ سے میوزک انڈسٹری اپنے پیروں پرکھڑی ہوجائے، اس کے لیے بہت محنت کی ضرورت ہے کیونکہ بالی ووڈ فلموں کی کامیابی میں سب سے زیادہ اہم کردارمیوزک کاہوتا ہے۔ اسی لیے توجب ان کی فلم دنیا بھرمیں نمائش کے لیے پیش کی جاتی ہے تواس سے پہلے فلم کا میوزک اس کی زبردست تشہیرکرچکا ہوتا ہے۔

Summary
Review Date
Reviewed Item
موسیقی کا شعبہ زوال پذیر ہے، سارہ لورین
Author Rating
51star1star1star1star1star

اپنا تبصرہ بھیجیں