ایران دہشت گردی کا سب سے بڑا سرپرست ہے: ڈین کوٹس

امریکی نیشنل انٹیلی جنس کے سربراہ ڈین کوٹس کا کہنا ہے کہ ایران حزب اللہ ملیشیا کو مسلح کرنے کے علاوہ اسے سپورٹ پیش کر رہا ہے ، وہ اپنے طور پر شام میں فورسز بھی پھیلا رہا ہے اور خطّے کے ممالک اور امریکا کی سلامتی کے لیے خطرہ بن رہا ہے ۔
انھوں نے باور کرایا کہ ایران دہشت گردی کا سب سے بڑا سرپرست اور مشرق وسطی بالخصوص عراق، شام اور یمن میں سب سے بڑا حریف رہے گا۔ کوٹس کے مطابق ایران اپنے علاقائی رسوخ کو وسیع کرنے پر کام کرے گا اور داعش کے خلاف جنگ سے فائدہ اٹھائے گا تا کہ زمینی کامیابیوں کو سیاسی

مزید پڑھیں :رینگنےوالےجانوروں کےذریعےایران کی جاسوسی ہورہی ہے

سکیورٹی اور اقتصادی معاہدوں میں تبدیل کیا جا سکے ۔امریکی انٹیلی جنس کی سالانہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایران کی جانب سے الحشد الشعبی اور دیگر شیعہ ملیشیاؤں کے لیے سپورٹ عراق میں امریکی فوجیوں کے لیے خطرہ ثابت ہو سکتی ہے ۔ انٹیلی جنس اداروں نے ایک بار پھر روس کے تصرّفات کے حوالے سے بھی اپنی تشویش کا اظہار کیا ہے جس نے امریکا میں سائبر حملوں اور سیاسی زندگی میں مداخلت کی کوشش کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے ۔ امریکی انٹیلی جنس نے خطرات کی فہرست میں روس، چین، ایران اور شمالی کوریا کے ہتھیاروں کو داخل کیا ہے جن میں وسیع تباہی کے ہتھیار بھی شامل ہیں۔درایں اثنا امریکی نیشنل انٹیلی جنس کے سربراہ ڈین کوٹس نے کہا ہے کہ پاکستان تا حال دہشت گردوں کے خلاف نرمی سے پیش آ رہا ہے ۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق سینیٹ کی انٹیلی جنس کمیٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے ان کہنا تھا کہ پاکستانی فوج اگرچہ انسداد دہشت گردی کے لیے امریکا سے تعاون کر رہی ہے تاہم وہ اپنی سرزمین پر دہشت گردوں کے خلاف نرم رویہ اپنائے ہوئے ہے جب کہ امریکا کی جانب سے بار بار ’’ڈو مور‘‘کے مطالبے کے باوجود پاک فوج صرف اور صرف حقانی نیٹ ورک اور طالبان جنگجوؤں کے خلاف سختی سے پیش آرہی ہے ۔ڈین کوٹس نے الزام عائد کیا کہ پاکستانی سرزمین پر موجود دہشت گرد محفوظ ٹھکانوں کا فائدہ اٹھا کر مسلسل بھارت اور افغانستان پر حملے کر رہے ہیں جس سے امریکی مفادات کو خطرات درپیش ہیں۔ انٹیلی جنس سربراہ نے کہا کہ امریکا کی جانب سے بار ہا درخواست کے رد عمل میں پاک فوج نے طالبان اور ان سے وابستہ شدت پسند گروپوں کے خلاف سخت کارروائیاں کیں تاہم پاکستان کی جانب سے اب تک جو بھی اقدامات کیے گئے وہ ان دہشت گرد گروپوں کے گرد گھیرا تنگ کرتے نظر نہیں آتے ، اسی بنا پر پاکستانی اقدامات کے دیرپا اثرات مرتب نہیں ہو رہے ۔ڈین کوٹس کا کہنا تھا کہ امریکی انٹیلی جنس ایجنٹس اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ پاکستان ان دہشت گردوں کے خلاف کارروائیاں کرکے امریکا سے تعلقات کو بہتر بنائے گا اور دہشت گردی کے خاتمے کے لیے امریکا سے تعاون جاری رکھے گا۔

Summary
Review Date
Reviewed Item
ایران دہشت گردی کا سب سے بڑا سرپرست ہے: ڈین کوٹس
Author Rating
51star1star1star1star1star

اپنا تبصرہ بھیجیں