ٹویوٹا کرولا میں سجدے اور دیسی مرغی کا فاتح

تحریر:محمدحنیفکراچی کی ایک بڑی شاہراہ پر بتی سرخ ہوئی۔ میں سڑک پار کرنے کے لیے لپکا تو ایک سفید ٹویوٹا کرولا سامنے رکی، میں نے گاڑی کے مسافر کو دیکھا تو میرا دِل زور سے دھڑکا، سانس بند ہونے لگی۔ ڈرائیور کی ساتھ والی سیٹ پر میرے صحافتی ہیرو ہارون الرشید صاحب تشریف فرما تھے مزید پڑھیں

زوجی سیاست بمقابلہ جوگی سیاست

تحریر:آصف جیلانیتحریک انصاف نے اس امر کی تصدیق کر دی ہے کہ تحریک کے قائد عمران خان کی اتوار 18فروری کو بشریٰ مانیکا کے ساتھ شادی انجام پا گئی ہے ۔  عمران خان کی تیسری شادی سے یہ بات ثابت ہوگئی ہے کہ پاکستان میں سیاست دانوں کی ازدواجی زندگی کی بے حد اہمیت ہے مزید پڑھیں

موت دو سیکنڈ پیچھے ہے

تحریر:اویس احمدموت زندگی سے محض دو سیکنڈ پیچھے بھاگتی رہتی ہے ۔ ہم سب دو سیکنڈ کی زندگی گزار رہے ہیں۔ موت ہر لحظہ جھپٹتی ہے مگر زندگی دو سیکنڈ آگے سرک جاتی ہے ۔ دو سیکنڈ کا یہ فاصلہ ہماری زندگی کا ضامن ہے ۔ اگرزندگی کی رفتار میں صرف دو سیکنڈ کا فرق مزید پڑھیں

محبت کی رگوں میں آپ کا خون ہے

تحریر:ماہ وش عدیلمحبت کرنا اور نبھانا اتنا ہی آسان اور مشکل ہے جتنا بالترتیب تتلی کو پکڑنا اور پھر اسے طویل عرصے تک زندہ رکھنے کی تگ و دو کرنا ہے !  اور یوں ہے کہ محبت اور تتلی میں کئی چیزیں مشترک ہیں. یہ دونوں ہی چار حرفی لفظ ہیں، دونوں کے پر لگے مزید پڑھیں

فٹ پاتھ پر چرسی تو قبول ہے مگر اسکول نہیں

تحریر: سدرہ ڈار ‘محترمہ اس اسکول میں پڑھائی نہیں ہوتی، یہ تو بس کمائی کا ذریعہ ہے ۔’ اسکول کے قریب واقع ایک دکان پر بیٹھے ایک صاحب نے سگریٹ سلگاتے ہوئے جیسے مجھے ایک بریکنگ نیوز دی۔ شاید وہ جان چکے تھے کہ میں کراچی میں عبداللہ شاہ غازی کی مزار کے قریب واقع مزید پڑھیں

کاش عاصمہ جہانگیر اپنی صحت کا خیال رکھتی

تحریر:ڈاکٹرغزالہ قاضی بارہ فروری، اتوار کے روزجب عاصمہ جہانگیر کی وفات کی خبر پڑھی تو اپنی آنکھوں پر یقین نہیں آیا۔ میں نے سوچا کہ شاید خبر غلط ہو۔ پھر اس خبر کے غلط ہونے کی دعائیں مانگیں، مگر صد افسوس یہ خبر صحیح ثابت ہوئی۔ ان پر اتنے خوبصورت مضمون لکھے جا چکے ہیں مزید پڑھیں

راؤ انوار کیوں پیش نہ ہوئے ؟

تحریر:اعظم خان آج کل توہین عدالت کا چرچا عام ہے ۔ کچھ اس جرم میں جیل بھی پہنچ گئے ہیں۔ توہین عدالت ہوتی کیا ہے ؟ یہ ہوتی کب ہے ؟ شاید جب ریاستی ادارے ریاست کے ایک بنیادی ستون عدلیہ سے تعاون کرنا چھوڑ دیں تو پھر توہین ہو جاتی ہے ۔ لیکن یہ مزید پڑھیں

سحرش اپنے بچپن سے ایک اندھیرے کمرے میں قید ہے

تحریر:سدرہ ڈار سینتیس سالہ سحرش ایک کامیاب بینکر ہے ، ترقی کی منازل اس نے اپنی تعلیم ختم ہونے کے بعد کے بارہ برسوں میں تیزی سے عبور کیں یوں تو اسے کسی شے کی کمی نہیں لیکن ایک بات کا طعنہ اسے ہمیشہ دیا جاتا ہے اور دیا جاتا رہے گا کہ اس نے مزید پڑھیں

میں صاحب کی دوست گڑیا ہوں۔۔۔۔

تحریر:صائمہ ملک ایک دن فون کی گھنٹی بجی. میں نے فون اٹھایا تو دوسری جانب سے آوازآئی، مجھے ملک صاحب سے بات کرنا ہے ۔ ملک صاحب گھر پر تشریف فرما نہیں تھے جس کی وجہ سے میں نے معذرت کی کہ بات نہیں ہو سکتی کیونکہ وہ موجود نہیں۔ جواب آیا کہ آپ پوچھیں مزید پڑھیں

کیا ذمہ دار عورت ہوتی ہے ؟

تحر یر:حاشرابن ارشاد خاتون کے جسم پر کپڑے کے نام پر دو دھجیاں تھیں۔ سر پر سرفنگ بورڈ تھا اور سڑک عبور کرنے کے لیے وہ کم ازکم بیس مردوں کے درمیان اشارہ سبز ہونے کی منتظر تھی۔ اشارہ سبز ہوا۔ سب نے اپنی اپنی راہ لی۔ کسی نے خاتون پر دوسری نظر ڈالنے کی مزید پڑھیں