دھند،گاندھی میدان اور جو کی شراب

سردیوں کے موسم میں جب کبھی گہری دھند چھاتی ہے اور ٹھنڈی ہوائیں جسم کی رگ رگ میں کپکپی پیدا کرنے لگتی ہیں تب بہت ساری پرانی یادیں اس دھند کی چادر کو چیر کر نگاہوں کے سامنے روشن ہو جایا کرتی ہیں۔ محیب لاج سے ایک ایسی ہی یاد بھی وابستہ ہے اس لاج مزید پڑھیں

جی سی یونیورسٹی کے نابینا لیکچرار سے ملیئے

‘میں لوگوں کو دیکھنے کا خواہشمند نہیں، میری خواہش ہے کہ لوگ مجھے دیکھ کر مثالیں دیں۔’یہ الفاظ پینتس سالہ انور علی کے ہیں جو بینائی سے محروم ہوتے ہوئے بھی عام افراد سے کہیں زیادہ بلند حوصلے کے مالک ہیں۔انور علی گورنمنٹ کالج یونیورسٹی فیصل آباد سے سیاسیات میں ایم فِل کرنے کے بعد مزید پڑھیں

تہذیب بولتی ہے : دریا اور انسان کا مُکالمہ

دریا: آے آدم کی اولاد مجھ پر رحم کر۔ انسان: رحم جذباتی نعرے کے سوا کچھ نہیں ہوتا ،میں سرمایہ دار ہوں ،میرا جذبات سے کیا لینا دینا۔ دریا: مگر جو تو کر رہا ہے وہ جذبات سے ہٹ کر عقل کے تقاضوں کے بھی خلاف ہے ۔ انسان: مجھے میرے مفادات عزیز ہیں اور مزید پڑھیں

عامر لیاقت اور آزادی اظہار کا صحیح طریقہ

پیمرا نے عامر لیاقت کے متعلق حکم لگایا ہے کہ انہوں نے آزادی اظہار کا غلط استعمال کیا ہے اس لئے ان پر پابندی عائد کر دی گئی ہے ۔ ہمیں آزادی اظہار کے صحیح طریقے پر ایک بہت پرانا قصہ یاد آ گیا ہے ۔ کہتے ہیں کہ سرد جنگ کے دنوں میں ایک مزید پڑھیں

میں نسبی کسبی ہوں اس لئے منصبی ہوں

پیشہ آخر پیشہ ہوتا ہے ۔ اینکر ہو یا عالم، صوفی ہو یا ملنگ، پیشے سے محبت ہی جزوئے ایمان ہے چاہے پیشہ بیسوا کا ہو یا خطیب کا۔ گاہک تو آتے جاتے ہیں وہ تو تماش بین ہیں، جو کل تھے آج نہیں اور جو آج ہیں کل نہیں ہوں گے ۔ اصل چیز مزید پڑھیں

عبدالرحمن چغتائی کی پہلی تصویر اور علامہ اقبال

چغتائی صاحب کی مصوری میں ہمیں دو روایات کا ملاپ نظر آتا ہے ۔ ایک طرف ایرانی، ترک اور مغل مصوری ہے ، دوسری طرف بنگالی مصوروں کی بنائی ہوئی وہ تصاویر ہیں جو جدید انڈین مصوری کی بنیاد رکھتی ہیں۔ بنگال سکول آف آرٹ کو اگر دور جا کر دیکھا جائے تو اس کا مزید پڑھیں

والد صاحب کے برے وقتوں کی ساتھی، میٹرو بس، اور آرمی چیف کی اراضی

یہ اس وقت کی بات ہے جب میرا تعلق متوسط طبقے سے نہیں تھا۔ والد صاحب کے پاس ایک 1989 ء ماڈل کی یاماہا 100 تھی جو ان کے علاوہ دنیا کا کوئی انسان نہیں چلا سکتا تھا۔ مکینک بھی اکثر ٹھیک کرنے کے بعد والد صاحب سے ہی سٹارٹ کرنے کی درخواست کرتا تھا۔ مزید پڑھیں

گم شدہ افراد کا فسانہ غائب

اغوا کیے جانے والے سوشل میڈیا کے کارکنوں کے ہمدردوں کو تسلی دینے کے لیے آج کل فیض کی وہ نظم سنائی جاتی ہے ۔ نثار میں تیری گلیوں کے ۔ اس نظم میں فیض صاحب نے مشورہ دیا تھا کہ نظر چرا کے چلے ، جسم و جاں بچا کے چلے ۔ لیکن اس مزید پڑھیں

فاسٹ باؤلروں کی چالاکیاں

پشاور کے ایک مشہور فاسٹ بالر تھے ۔ نیوزی لینڈ کے خلاف ون ڈے میں ایک بار پانچ وکٹیں لے بیٹھے ۔ قومی ٹیم میں شامل رہے تھوڑا عرصہ لیکن کرکٹ بورڈ میں افسری کرتے عمر بتا دی۔ ایک فسٹ کلاس میچ کے دوران موصوف کو نہایت تسلی سے مار پڑی۔ ان کو اتنے چوکے مزید پڑھیں

گیان کی شکتی اور شکتی کا گیان

کہتے ہیں کہ پرانے وقتوں میں چار دوست ہوا کرتے تھے ۔ تین دوست نہایت پڑھے لکھے تھے ۔ ایک جین مت کا گیانی تھا۔ دوسرا بدھ جوگی تھا۔ تیسرا ہندو اچاریہ تھا۔ تینوں پنڈتوں نے اپنے مذہب کی کتابوں، جاپوں اور منتروں میں کمال پایا تھا۔ اشلوک پڑھ کر کچھ کا کچھ کر دیتے مزید پڑھیں